کھٹمل سے نجات کا انتہائی آسان گھریلو نسخہ

1

کھٹمل سے نجات کے لیے بازار میں موجود ادویات وقتی طور پر تو موثر ثابت ہوتی ہیں لیکن مناسب صفائی نہ ہونے یا میٹرس وغیرہ کے استعمال کی وجہ سے جلد ہی گھر کے کونے کھدروں، بستروں  یا فرنیچر  میں کھٹمل پھر سے  بسیرا کر لیتے ہیں۔  ایک تحقیق کے مطابق چونکہ کھٹمل  سرخ  و سیاہ رنگ پسند اور سبزو زرد رنگ ناپسند کرتے ہیں ، لہٰذا سبزوزرد رنگوں کا استعمال زیادہ کرنا چاہیے لیکن محققین کے مطابق یہ ضروری نہیں ہے کہ ایسا کرنے سے آپ کھٹملوں سےمحفوظ بھی رہ پائیں۔

اسی طرح ان سے نجات کے لیے چند احتیاطی تدابیر و گھریلو نسخے بھی تجویز کیے جاتے ہیں جن میں تمام متاثرہ جگہوں کو اچھی طرح دھونا، اجوائن کی دھونی دینا، ٹی ٹری آئل یا لیونڈر آئل کا استعمال کرنا، نیم یا پودینے کے پتے پیس کر رکھنا وغیرہ شامل ہے۔   ان سب سے قطع نظر کھٹملوں کو مارنے کے لیے آپ  گھر میں موجود اشیاء کی مدد سے خود بھی دوا تیار کر سکتے ہیں جوکہ کم خرچ بالا نشیں کے مصداق ہے۔  

اسے تیار کرنے کےلیے آپ کو یہ چیزیں درکار ہوں گی

(کھانے کے 2 چمچے واشنگ پاؤڈر (کپڑے دھونے کا پاؤڈر

کھانے کے 2 چمچے جراثیم کش محلول (ڈس انفییکٹینٹ) مثلاً ڈیٹول وغیرہ اور

500 ملی لیٹر (2 گلاس) پینے کا صاف پانی

ان تمام چیزوں کو اسپرے گن والی بوتل میں ڈال کر خوب اچھی طرح سے ہلا ئیں۔ محلول تیار ہو جائے تو کھٹملوں پر چھڑک دیں جس کے بعد کھٹمل صرف تین سیکنڈزمیں مر جائیں گے۔  کھٹملوں کی تعداد زیادہ ہو تو اس دوا کو تب تک استعمال کریں جب تک ان کا خاتمہ نہ ہوجائے۔

کھٹمل مارنے کا یہ طریقہ نہایت آسان، محفوظ، کم خرچ اور بدبو سے پاک بھی ہے جس پر مہینے میں ایک سے دو بار عمل کرتے رہیں گے تو آپ کے گھر سے کھٹملوں کا صفایا ہوجائے گا۔ اس کے علاوہ  سال میں کم سے کم ایک بار اس کھٹمل مار گھریلو محلول کواستعمال کرنا بہت مفید ثابت ہوگا۔

You might also like More from author

1 Comment

  1. crackedidm.com says

    Hello to all, the contents present at this site are actually
    awesome for people knowledge, well, keep up the nice work fellows.

Leave A Reply

Your email address will not be published.